5 08 06 74 311 92+

فیصل آباد پنجاب ، پاکستان

ہم آپ کو بلاگر کے اردو ٹیمپلیٹس مہیا کر رہے ہیں۔ اگر آپ بھی اپنی پسند کا اردو ٹیمپلیٹ چاہتے ہیں تو ہم سے رابط کریں

جمعہ، 21 فروری، 2020

عمران خان نے عوام کو ایک ہی دن میں بڑی خوشی دے دی۔

عمران خان نے عوام کو ایک ہی دن میں بڑی خوشی دے دی۔ عمران خان نے عوام کو ایک ہی دن میں بڑی خوشی دے
دی۔ عمران خان نے عوام کو ایک ہی دن میں بڑی خوشی دے دی۔ عمران خان نے عوام کو ایک ہی دن میں بڑی خوشی دے دی۔ عمران خان نے عوام کو ایک ہی دن میں بڑی خوشی دے دی۔ عمران خان نے عوام کو ایک ہی دن میں بڑی خوشی دے دی۔ عمران خان نے عوام کو ایک ہی دن میں بڑی خوشی دے دی۔ عمران خان نے عوام کو ایک ہی دن میں بڑی خوشی دے دی۔ عمران خان نے عوام کو ایک ہی دن میں بڑی خوشی دے دی۔ عمران خان نے عوام کو ایک ہی دن میں بڑی خوشی دے دی۔ عمران خان نے عوام کو ایک ہی دن میں بڑی خوشی دے دی۔ عمران خان نے عوام کو ایک ہی دن میں بڑی خوشی دے دی۔ عمران خان نے عوام کو ایک ہی دن میں بڑی خوشی دے دی۔ عمران خان نے عوام کو ایک ہی دن میں بڑی خوشی دے دی۔ عمران خان نے عوام کو ایک ہی دن میں بڑی خوشی دے دی۔ عمران خان نے عوام کو ایک ہی دن میں بڑی خوشی دے دی۔ عمران خان نے عوام کو ایک ہی دن میں بڑی خوشی دے دی۔ عمران خان نے عوام کو ایک ہی دن میں بڑی خوشی دے دی۔ عمران خان نے عوام کو ایک ہی دن میں بڑی خوشی دے دی۔ عمران خان نے عوام کو ایک ہی دن میں بڑی خوشی دے دی۔ عمران خان نے عوام کو ایک ہی دن میں بڑی خوشی دے دی۔ عمران خان نے عوام کو ایک ہی دن میں بڑی خوشی دے دی۔ عمران خان نے عوام کو ایک ہی دن میں بڑی خوشی دے دی۔ عمران خان نے عوام کو ایک ہی دن میں بڑی خوشی دے دی۔ عمران خان نے عوام کو ایک ہی دن میں بڑی خوشی دے دی۔ عمران خان نے عوام کو ایک ہی دن میں بڑی خوشی دے دی۔ عمران خان نے عوام کو ایک ہی دن میں بڑی خوشی دے دی۔ عمران خان نے عوام کو ایک ہی دن میں بڑی خوشی دے دی۔ عمران خان نے عوام کو ایک ہی دن میں بڑی خوشی دے دی۔ عمران خان نے عوام کو ایک ہی دن میں بڑی خوشی دے دی۔ عمران خان نے عوام کو ایک ہی دن میں بڑی خوشی دے دی۔ عمران خان نے عوام کو ایک ہی دن میں بڑی خوشی دے دی۔ عمران خان نے عوام کو ایک ہی دن میں بڑی خوشی دے دی۔ عمران خان نے عوام کو ایک ہی دن میں بڑی خوشی دے دی۔ عمران خان نے عوام کو ایک ہی دن میں بڑی خوشی دے دی۔ عمران خان نے عوام کو ایک ہی دن میں بڑی خوشی دے دی۔ عمران خان نے عوام کو ایک ہی دن میں بڑی خوشی دے دی۔ عمران خان نے عوام کو ایک ہی دن میں بڑی خوشی دے دی۔ عمران خان نے عوام کو ایک ہی دن میں بڑی خوشی دے دی۔ عمران خان نے عوام کو ایک ہی دن میں بڑی خوشی دے دی۔ عمران خان نے عوام کو ایک ہی دن میں بڑی خوشی دے دی۔ عمران خان نے عوام کو ایک ہی دن میں بڑی خوشی دے دی۔ عمران خان نے عوام کو ایک ہی دن میں بڑی خوشی دے دی۔ عمران خان نے عوام کو ایک ہی دن میں بڑی خوشی دے دی۔ عمران خان نے عوام کو ایک ہی دن میں بڑی خوشی دے دی۔ عمران خان نے عوام کو ایک ہی دن میں بڑی خوشی دے دی۔ عمران خان نے عوام کو ایک ہی دن میں بڑی خوشی دے دی۔ عمران خان نے عوام کو ایک ہی دن میں بڑی خوشی دے دی۔ عمران خان نے عوام کو ایک ہی دن میں بڑی خوشی دے دی۔ عمران خان نے عوام کو ایک ہی دن میں بڑی خوشی دے دی۔ عمران خان نے عوام کو ایک ہی دن میں بڑی خوشی دے دی۔ عمران خان نے عوام کو ایک ہی دن میں بڑی خوشی دے دی۔ عمران خان نے عوام کو ایک ہی دن میں بڑی خوشی دے دی۔ عمران خان نے عوام کو ایک ہی دن میں بڑی خوشی دے دی۔ عمران خان نے عوام کو ایک ہی دن میں بڑی خوشی دے دی۔ عمران خان نے عوام کو ایک ہی دن میں بڑی خوشی دے دی۔ عمران خان نے عوام کو ایک ہی دن میں بڑی خوشی دے دی۔ عمران خان نے عوام کو ایک ہی دن میں بڑی خوشی دے دی۔ عمران خان نے عوام کو ایک ہی دن میں بڑی خوشی دے دی۔ عمران خان نے عوام کو ایک ہی دن میں بڑی خوشی دے دی۔ عمران خان نے عوام کو ایک ہی دن میں بڑی خوشی دے دی۔ عمران خان نے عوام کو ایک ہی دن میں بڑی خوشی دے دی۔ عمران خان نے عوام کو ایک ہی دن میں بڑی خوشی دے دی۔ عمران خان نے عوام کو ایک ہی دن میں بڑی خوشی دے دی۔ عمران خان نے عوام کو ایک ہی دن میں بڑی خوشی دے دی۔ عمران خان نے عوام کو ایک ہی دن میں بڑی خوشی دے دی۔ عمران خان نے عوام کو ایک ہی دن میں بڑی خوشی دے دی۔ عمران خان نے عوام کو ایک ہی دن میں بڑی خوشی دے دی۔ عمران خان نے عوام کو ایک ہی دن میں بڑی خوشی دے دی۔ عمران خان نے عوام کو ایک ہی دن میں بڑی خوشی دے دی۔ عمران خان نے عوام کو ایک ہی دن میں بڑی خوشی دے دی۔ عمران خان نے عوام کو ایک ہی دن میں بڑی خوشی دے دی۔ عمران خان نے عوام کو ایک ہی دن میں بڑی خوشی دے دی۔ عمران خان نے عوام کو ایک ہی دن میں بڑی خوشی دے دی۔ عمران خان نے عوام کو ایک ہی دن میں بڑی خوشی دے دی۔ عمران خان نے عوام کو ایک ہی دن میں بڑی خوشی دے دی۔ عمران خان نے عوام کو ایک ہی دن میں بڑی خوشی دے دی۔ عمران خان نے عوام کو ایک ہی دن میں بڑی خوشی دے دی۔ عمران خان نے عوام کو ایک ہی دن میں بڑی خوشی دے دی۔ عمران خان نے عوام کو ایک ہی دن میں بڑی خوشی دے دی۔ عمران خان نے عوام کو ایک ہی دن میں بڑی خوشی دے دی۔ عمران خان نے عوام کو ایک ہی دن میں بڑی خوشی دے دی۔ عمران خان نے عوام کو ایک ہی دن میں بڑی خوشی دے دی۔ عمران خان نے عوام کو ایک ہی دن میں بڑی خوشی دے دی۔ عمران خان نے عوام کو ایک ہی دن میں بڑی خوشی دے دی۔ عمران خان نے عوام کو ایک ہی دن میں بڑی خوشی دے دی۔ عمران خان نے عوام کو ایک ہی دن میں بڑی خوشی دے دی۔ عمران خان نے عوام کو ایک ہی دن میں بڑی خوشی دے دی۔ عمران خان نے عوام کو ایک ہی دن میں بڑی خوشی دے دی۔ 

ہفتہ، 2 نومبر، 2019

حیاء از فاخرہ وحید مکمل ناول


haya novel download free



اسلام و علیکم دوستو 

  آج ہم آپ کو اردو کا ایک شاہکار ناول دے رہے ہیں۔ جس کو پڑھ کے آپ کو بہت مزہ آئے گا۔ اور آپ کا دل کرے گا کہ دوبارہ پڑھیں۔ یہ ناول فاخرہ وحید نے لکھا ہے اور اس میں بہت ہی زبردست موذوں کو اپناہا گیا ہے۔ جو کہ ہمارے معاشرے کا ایک المیہ ہے۔ 

یہ ناول مکمل ناول ہے اور گوگل پلے سٹور سے ڈاونلوڈ ہوگا۔ 




اتوار، 29 ستمبر، 2019

ہمارا معاشرہ





ایک میاں، ایک بیوی اور ایک ننھا مُنا سا بیٹا۔ شادی کو تین سال گزرے تھے اور یہ خوشحال فیملی کراچی کے ایک مرکزی علاقے میں، ایک فلیٹ میں مقیم تھی۔ دن ہنسی خوشی گزر رہے تھے، مُنے کی کھلکھلاہٹیں ہر طرف مسکراہٹیں بکھیر دیتی تھیں۔ سامنے والے فلیٹ میں کچھ یونیورسٹی سٹوڈنٹس مقیم تھے۔ کراچی کے رہائشی پانی کی قلت کے معاملات سے تو آگہی رکھتے ہیں ...
یہ سٹوڈنٹس بعض اوقات ان لوگوں سے پانی لینے آجاتے، اور یہ فیملی بعض اوقات اُن سے پانی لے لیتی۔ ایک شام جب ایک سٹوڈنٹ پانی لینے آیا تو خاتونِ خانہ نے واپس بھیج دیا کہ شوہر گھر پر نہیں ہیں۔ شوہر کو جب یہ پتہ چلا تو انھوں نے کہا کہ پانی ایک بنیادی ضرورت ہے، مناسب نہیں لگتا کہ کسی کو واپس بھیجا جائے۔
" لیکن امتیاز! آپ کی غیر موجودگی میں ...! "
" ارے کچھ نہیں ہوتا، اتنے زیادہ فلیٹس ہیں اردگرد، کوئی تمھیں کھا تو نہیں جائے گا میری پیاری بیگم ... "
اور اس طرح شوہر کی غیر موجودگی میں بھی پانی بھرنے کا سلسلہ شروع ہوگیا۔ ایک دن ایک سٹوڈنٹ آیا، مُنے نے ماں کے ہاتھ کا بنا ہوا کسٹرڈ اس کو کھلا دیا ...
" ارے واہ! آپ کی ماما تو بہت خوب بناتی ہیں، کیا کمال کا ذائقہ ہے، ایسی مہارت کبھی دیکھی نہیں ... "
فاروق کچھ ایسے انداز اور آواز میں بولا کہ اندر کچن میں کھڑی نادیہ بھی مرعوب ہو گئی ...
آج تک امتیاز نے اس طرح نادیہ کی تعریف نہیں کی تھی۔ پھر باقی سٹوڈنٹس کی جگہ صرف فاروق کی آمد شروع ہو گئی اور وہ بھی امتیاز کی غیر موجودگی میں۔ مُنے سے باتیں ہوتیں لیکن سُنائی نادیہ کو جاتیں، کبھی کپڑوں کے انتخاب کی تعریف، کبھی کُوکنگ کی تعریف، کبھی کسی بات کی اور کبھی کسی بات کی۔ نادیہ بھی اب اس کی آمد اور تعریف کی عادی ہوتی جارہی تھی، اور پھر ایک دن فاروق نے اس کی خوبصورتی کی ایسے تعریف کی وہ سحر زدہ ہوگئی ...
" امتیاز میری کیوں ایسے تعریف نہیں کرتا ...؟میں بھی لڑکی ہوں، میرا دل بھی چاہتا ہے کہ کوئی میری تعریف کرئے ... "
اور پھر ایک دن ایسا آیا کہ تعریف کے لئے مُنے کی آڑ بھی ختم ہوگئی۔ یہ سلسلہ شادی کے عہد و پیماں تک پہنچ گیا۔
امتیاز تک یہ خبر تب پہنچی جب پانی سر سے گزر چکا تھا۔دونوں خاندانوں نے لڑکی کو سنگین دھمکیاں دیں لیکن نادیہ طلاق سے کم پر راضی ہی نہ تھی، درپردہ فاروق کا مکمل تعاون اسے حاصل تھا۔ معاملہ عدالت میں چلا گیا اور آخر اس شرط پرطلاق ہوئی کہ مُنا باپ کے پاس رہے گا۔
نادیہ نے یہ پتھر بھی دل پر رکھنا گوارا کر لیا۔ اس کے گھر والوں نے اس کا ہمیشہ کے لئے مقاطعہ کر دیا۔ عدت پوری ہونے کے بعد نادیہ کی شادی فاروق سے ہو گئی۔ امتیاز نے دوبارہ شادی نہیں کی اور مُنے کے سہارے زندگی گزار رہا ہے جو اب تیرہ سال کا ہو چکا ہے ...
جی میرے نہایت ہی قابل قدر و باشعور قارئین کرام! آپ بتائیں کہ سب سے زیادہ قصوروار کون ہے ...؟
نادیہ! جس نے فاروق سے شادی کے لئے شوہر، بیٹے اور اپنے گھر والوں کو قربان کر دیا ...؟
فاروق! جس نے ایک شادی شدہ لڑکی کو یہ راستہ دکھایا ...؟
یا
امتیاز! جس نے اپنی بیوی کی رضامندی نہ ہونے کے باوجود ایک نامحرم کو اپنی غیر موجودگی میں اپنے گھر کا راستہ دکھایا ...؟
قارئین!
فیصلہ جذبات کو ایک طرف رکھ کر کیجیے گا ...

حجاج بن یوسف اور ایک نا بینا کا واقعہ

اسلامی کیانیاں



حجاج بن یوسف ایک شخص تھا اس امت میں ۔ جو بہت زیادہ سخت طبیعت رکھتا تھا اور جو بات بھی اس کے دل میں آتی تھی اس کو کر دیتا تھا ۔۔۔ ایک دفعہ وہ طواف کر رہا تھا تو اس نے دیکھا کہ مطاف کے اندر بیٹھ کر ایک اندھا دعا مانگ رہا ہے کہ اللہ میری آنکھوں کو بینا کر دے، مجھے روشنی عطا کر دے، وہ حجاج جب اس کے قریب سے گزرنے لگا تو اس نے پاؤں کی ٹھوکر مار کر کہا،
او اندھے! تجھے پتہ ہے کہ میں کون ہوں، تو وہ بے چارہ حیران ہو گیا کہ یہ کون ہے؟ پوچھا کون؟ کہنے لگا کہ حجاج بن یوسف، وہ تو گھبرا گیا تو حجاج بن یوسف نے کہا کہ دیکھ میں طواف کر رہا ہوں اور میرے چند چکر باقی ہیں، میرے طواف مکمل ہونے تک تیری آنکھیں ٹھیک نہ ہوئیں تو میں تجھے قتل کروا دوں گا اور ساتھ ہی ایک سپاہی بھی متعین کردیا کہ اندھا بھاگنے نہ پائے، خود طواف کرنے لگ گیا، اب تو اندھے کا حال ہی عجیب ہو گیا، دعا مانگتا تھا کہ پہلے تو بینائی کا سوال مانگتا تھا، اب تو زندگی کا سوال ہے، اس طرح تڑپ کر اس اندھے نے دعا مانگی کہ اس کے طواف ختم کرنے سے پہلے اللہ نے بینائی عطا فرما دی، حجاج بن یوسف نے کہا کہ میں نے اپنے بڑوں سے یہ بات سنی ہے کہ جیسے تم پہلے دعا مانگ رہے تھے، قیامت تک یہاں بیت اللہ کے سامنے بیٹھ کر وہ دعا پڑھتے رہتے تو تمہیں بینائی کبھی نہ ملتی، کیونکہ زبان سے الفاظ نکل رہے تھے، دل حاضر نہیں تھا، اب جب تمہیں جان کی فکر ہوئی کہ میری موت اور زندگی کا سوال ہے اب تم نے تڑپ کر دعا مانگی اور جو بندہ اس مطاف میں تڑپ کر دعا مانگے اللہ کبھی اس کی دعا کو رد نہیں کیا کرتے۔

یہاں امید سے زیادہ ملتا ہے ۔۔۔۔۔
حاتم طائی ایک امیر، سخی آدمی گزرا ہے، اس سے ایک مرتبہ کسی فقیر نے پانچ دینار مانگے تو اس نے اپنے نوکر سے کہا کہ اس کو پانچ سو دینار لا کر دے دو، نوکر بڑا حیران ہوا، کہنے لگا کہ جی پانچ دینار مانگے تھے، آپ نے پانچ سو دینار دینے کا حکم دے دیا، حاتم طائی نے کہا تھا وہ مانگنے والے کا ظرف تھا اور یہ دینے والے کا ظرف ہے، اگر دنیا کا سختی پانچ مانگنے والے کو پانچ سو دے دیا کرتا ہے تو وہ تو سب کا کریم آقا ہے، آج ہم جتنا مانگیں گے یقیناً ہمارے اندر کی تڑپ کو دیکھتے ہوئے وہ پروردگار پھر اپنی شان کے مطابق عطا کر دے گا ۔ ۔ ۔ ۔ ان شاءاللہ

بدھ، 25 ستمبر، 2019

کھوکھلا کر گیئں اندر سے



کھوکھلا کر گیئں ہیں اندر سے 
اذیتیں تیرے عشق کی جاناں
ہمیں امید ہے کہ آپ کو ہمارا ٹیمپلیٹ مسند آئے گا۔ تو ہمیں ٹوئٹر پر فالو کریں - دی نائیں نیوز
نئی اشاعتیں اپنے ان باکس میں وصول کریں